شناخت فلم نے میری فلم انڈسٹری میں پہچان بنادی اب کامیڈی فلم گول گپو فلموں کا ٹرینڈ تبدیل کردے گی-فلم رائٹر ڈائریکٹر زبیر شوکت

لاہور کراچی کا کوئی مقابلہ نہیں فلم یاکستان کی ہے ہمیں پاکستانی فلموں کو سپورٹ کرنا چاہیئے

کامیڈی فلم وقت کی اہم ضرورت ہے گول گپو سے بہت سی امیدیں وابستہ ہیں

میں نے ہمیشہ کچھ نیا کرنے کی کوشش کی ہے یہی وجہ ہے کہ فلم ٹی وی ڈائریکشن کی باقاعدہ تربیت حاصل کرکےفلم انڈسٹری میں آیا تو سب سے پہلی فلم شناخت بنائی جو خواجہ سرا کے موضوع پر بنائی جسے عام عوام کے ساتھ خواجہ سراوں نے بہت یسند کیا اور پہلی دفعہ فلم میں کثیر تعداد نے کام کیا اور ایک آئٹم سونگ بھی عکسبند کیا گیا ان خیالات کا اظہار نوجوان فلم رائٹر ڈائریکٹر زبیر شوکت نےایک ملاقات میں کیا ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ میں نے فلم اور ڈرامہ ڈائریکشن کا باقاعدہ کورس کیا کافی ڈاکیومینٹریز بھی بنائی فلم لکھی جس کا موضوع بڑا حساس تھا یعنی جسے معاشرے میں تیسری جنس کے نام سے یاد کیا جاتا ہے ان کی زندگی میں تلخ حقائق کو سامنے لانا چاہتا تھا سکرپٹ پر محنت کی کیوں کہ معاشرے میں ان کو حقارت کی نظر سے دیکھا جاتا ھے مذاق اڑایا جاتا جنسی استحصال کیا جاتا اور ان کی زندگی کے چھپے پہلو منظر عام پر لانا تھا اس لیئے فلم شناخت بطور ڈائریکٹر سٹارٹ کی کہ جو میں نےلکھا کوئی ویسا شوٹ نا کرسکے گا یوں فلم ڈائریکشن کا آغاز کیا ٹی وی پر تو اس موضوع پر طبع آزمائی ہو چکی تھی فلم میں پہلی دفعہ کام ہوا نامور فنکاروں نے کام کیا جن میں نئیر اعجاز مسعود اختر اور دیگر نامور فنکار شامل تھے فلم کو اچھا رسپانس ملا لاہور کے سینما میں دو سو سے زائد خواجہ سرا فلم دیکھنے آئے میں جب ان لوگوں کو ٹریفک سگنلز پر بھیک مانگتے لوگوں کے ہاتھوں ذلیل ھوتے دیکھتا تو دل کڑھتا تھا یہی میں بتانا چاہتا تھا کہ اگر یہ ایسے ہیں تو ان کا کوئی قصور نہیں ایک اور سوال کے جواب میں بتایا کہ کامیڈی فلم بنانے کا خیال ایسے آیا کہ موجودہ دور ٹینشن سے بھرپور ہے جس میں کامیڈی فلم وقت کی اہم ضرورت ہے اسی کو دیکھتے ہوئے کامیڈی فلم گول گپو بنائی جو مکمل کامیڈی فلم ہے انٹرٹینمنٹ سے بھریور فلم کی مین کاسٹ میں اشرف خان سخاوت ناز زنیرہ ماہم زارا اور دیگر شامل ہیں اس فلم سے بڑی امیدیں وابستہ ہیں اس فلم کو عید پر ریلیز کرنے کا ارآدہ ہے اس فلم کی کامیابی سے کامیڈی فلموں کا دور آئے گا ایک اور سوال کے حواب میں کہا کہ جلد ہی میں ٹی وی سکرین پر بھی اپنی صلاحیتوں کا اظہار کروں گا زبیر شوکت نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ شناخت فلم کے بعد کامیڈی فلم بنا رہا آگے کیا ہونا یہ تو رب کی ذات جانتی مگر ارادہ ہے کہ ایک ہارر فلم بھی بناوں وہ مکمل ہارر مووی ھوگی ایک اور سوال کے جواب میں کہا کہ ہمیں آپس میں مقابلہ بازی کی بجائے مل کر عالمی میعار کی فلمیں بنانی چاہئیں ایک دوسرے کی ٹانگیں کھینچنے کی بجائے کام پر دھیان دینا چاہئیے انڈسٹری کی بحالی اور ترقی کے لئیے مل جل کر اپنا حصہ ڈالنا ہوگا کیونکہ انڈسٹری ہے تو ہم ہیں زبیر شوکت کا کہنا ہیے کہ فلم بینوں سے یہی کہنا کہ یاکستانی فلموں کو سپورٹ کریں گول گپو کو بھی دیکھنے آئیں پاکستانی سینما کو سپورٹ کریں زبیر شوکت کا یہ بھی کہنا تھا کہ آنے والی فلم اور ڈرامےمیں نئے آرٹسٹ بھی متعارف کرواوں گا سکرین یر بھی تازگی کا احساس ھو زبیر شوکت نے کہا کہ ہمسایہ ملک سے خوفزدہ نہیں اپنی صلاحیتوں پر بھروسہ ہے اب فلم ٹی وی پر پڑھے لکھے باصلاحیت تربیت یافتہ لوگ کام کر رہے امید ہے جلد انڈسٹری پر اچھا۔دور آئے گا

انٹرویو:انجم شہزاد

شیئرکریں