سابق ڈی جی پلاک ڈاکٹر صغرا صدف کے اعزاز میں لاہور پریس کلب میں ٹقریب

تقریب کا اہتمام پریس کلب کلچرل کمیٹی اور کلچرل جرنلسٹس فاوءنڈیشن نے مشترکہ طور پر کیا

صدر لاہور پریس کلب ارشد انصاری نے کہا ہم ان کو واپس پلاک لانے کے لیئے وفد کی صورت میں وزیر اعلی سے ملیں گے جس کی حمائت تقریب میں موجود سب افراد نے کی

ڈاکٹر صغریٰ صدف کو اسلام آباد اکیڈمی آف لیٹرز میں نہیں جانے دیں گے بلکہ ایک دو دن میں وفد کی صورت میں وزیراعلیٰ پنجاب سے ملاقات کرکے ان کا تبادلہ روکنے کے لئے انہیں کہیں گے کیونکہ ان کی پلاک اورپنجاب کو بہت زیادہ ضرورت ہے۔صدر لاہور پریس کلب ارشد انصاری کی اس تجویز کی شوبز اور ادبی شخصیات نے بیک وقت حمایت کردی ۔پلاک کی سابق ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر صغریٰ صد ف کے اعزاز میں لاہور پریس کلب کلچرل کمیٹی اور کلچرل جرنلسٹس فاونڈیشن آف پاکستان کی جانب سے اعتراف فن تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں صدرلاہور پریس کلب ارشد انصاری ،سینئر نائب صدر ذوالفقارعلی مہتو،ممبر گورننگ باڈی عمران شیخ، سید نور، بابامحمد یحیٰ خان ، نا صر ادیب ، عارف لوہار،پرویز کلیم،راشد محمود،اشرف خان،الطاف حسین،بشری صادق،غفار لہری،سرفراز انور،قمرالزمان بھٹی سمیت شوبز سے تعلق رکھنے والی نمایاں شخصیات نے شرکت کی۔اس موقع پر شرکاءنے ڈاکٹر صغریٰ صدف کی بطور ڈی جی پلاک خدمات کو شاندار انداز میں خراج تحسین پیش کیا۔صدر لاہور پریس کلب ارشد انصاری نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ہم ڈاکٹر صغریٰ صدف کو اسلام آباد اکیڈمی آف لیٹرز میں نہیں جانے دیں گے بلکہ ایک دو دن میں وفد کی صورت میں وزیراعلٰی پنجاب سرداد عثمان بزدار سے ملاقات کرکے انہیں ڈاکٹر صغریٰ صدف کا تبادلہ روکنے کے لئے کہیں گے کیونکہ ان کی پلاک اورپنجاب کو بہت زیادہ ضرورت ہے۔ارشد انصاری کی اس تجویز کی تقریب کے تمام شرکاءنے ہاتھ کھڑے کرکے تائید کی۔ڈاکٹر صغرا صدف نے اس موقع پر سب کاشکریہ اداکرتے ہوئے کہاکہ میرے پاس شکریہ کے لئے الفاظ نہیں ہیں۔ مجھے لاہور پریس کلب سے وہی محبت ہے جو پلاک سے ہے۔ڈاکٹر صغریٰ صدف نے کہاکہ میں نے پی ایچ ڈی تو تصوف میں کی ہے لیکن چلہ پلاک میں کاٹاہے۔راشد محمود نے کہاکہ خوش قسمت ہوتے ہیں وہ لوگ جن کی کامیابیوں کاجشن ان کی زندگی میں منایاجاتاہے اورڈاکٹر صغریٰ صدف اس حوالے سے بہت خوش قسمت ہیں۔ناصر ادیب نے کہاکہ اگر ڈاکٹر صغریٰ صدف نہ ہوتیں تو مجھے آج بھی پرائیڈآف پرفارمنس نہ ملتا،یہ ایوارڈ ان کی امانت ہے۔میں کبھی ایوارڈ کے لئے تو چودھری پرویز الٰہی کے پاس نہیں گیا لیکن ڈاکٹرصغریٰ صدف کی پلاک میں دوبارہ بطور ڈی جی تعیناتی کے لئے ضرور جاﺅں گا۔بابا محمد یحیٰ خان نے کہاکہ میری دعائیں صغریٰ صدف کے لئے ہیں۔سیدنور نے کہاکہ میری ماں کانام بھی صغریٰ ہے اورڈاکٹر صغریٰ صدف میں مجھے اپنی ماں نظرآتی ہے۔انہوں نے کہاکہ ڈاکٹرصغریٰ صدف نے پلاک کے لئے بے پناہ کام کیا جونظربھی آیا۔ان کویہاں سے نہیں جاناچاہیے۔گلوکار عارف لوہارنے کہاکہ ڈاکٹرصغریٰ صدف جب سے پلاک سے گئی ہیں وہاں پر ویرانی ہی ویرانی ہے انہوں نے پلا ک میں میلوں کااہتمام کیاجوپنجاب کی ثقافت ہے اورمیری ان سے محبت بھی اسی مناسبت سے ہے۔صدر کلچرل جرنلسٹس فاﺅنڈیشن آف پاکستان طاہر بخاری،جنرل سیکرٹری ٹھاکر لاہوری،سہیل بخاری،محمد یامین صدیقی،سیف اللہ سپرا،دادا طفیل اختر،الطاف حسین،منورسلطانہ،ناصربشیر،اشرف خان،عارف لوہار،خالدرامے،ڈاکٹرناصر بلوچ،ڈاکٹرکنول فیروز،ناصربیراج،اقبال قیصر،بشری صادق اوردیگر نے بھی اس موقع پر ڈاکٹر صغری صدف کے لئے نیک تمناﺅں کااظہار کیا۔تقریب کی نظامت کے فرائض نعیم حنیف نے بخوبی سر انجام دیئے۔

شیئرکریں