فیشن فوٹو گرافر سرور بخاری کا فنکاروں، صحافیوں کے اعزاز میں ڈنر

فنکاروں، اور شوبز صحافیوں کی کثیر تعداد میں شرکت، گلوکاروں نے گائیکی سے سماں باندھ دیا


رپورٹ، انجم شہزاد

معروف فیشن فوٹو گرافر سید سرور بخاری نے مختصر عرصہ میں شوبز حلقو ں میں اپنی ایک منفرد شناخت بنائی ہے، اس میں جہاں ان کا کام ہے وہاں وہ نہائت با اخلاق شخصیت کے مالک ہیں، اور وہ فنکاروں کے اعزاز میں مختلف تقریبات بھی کرتے رہتے ہیں، جیسے کسی فنکار کی سالگرہ تقریب منعقد کر لی، گزشتہ دنوں انہوں نے اپنے چند مخصوص دوستوں کے لیئے لاہوری ناشتے کا اہتمام کیا تھا، ابھی اس ناشتے کی بازگشت سنائی دے ہی رہی تھی کہ انہوں نے فنکار برادری اور صحافیوں کے لیئے با ر بی کیو اور ڈنر کا اہتمام کیا، جس کو ’’ویلنٹائن کپل ڈنر‘‘ کا نام دیا گیا تھا، تقریب میں شوبز سے وابستہ افراد کے علاوہ، صحافت اور دیگر شعبوں کے افراد بھی شریک ہوئے، تقریب میں جن افراد نے شرکت کی ان میں اداکارظفر عباس کھچی،، پیفا کے چیئرمین مختار احمد، اداکار، و پروڈیوسربلاول علی خان،گلوکارہ مہرین حسن، علیزے راجپوت، ماڈل، عبیرہ، ماڈل،فجر اریبہ،شیزہ،، فاطمہ بخاری، گلوکار ناصر بیراج، رضوان حسن،عمران نیازی، امیر احمد، صحافیوں میں ملک آصف شہزاد، ، خضر عباس، شہزاد فراموش، انجم شہزاد، سید وقار رضوی،سیدہ نگینہ شاہ، فوزیہ چوہدری،فرید مغل، احمد نواز،بابر ناگی، عاصمہ بھٹی،اور جمخانہ کلب کے افراد نے بھی شرکت کی، اس موقع پر خصوصی گفتگو کرتے ہوئے سید سرور بخاری نے کہا کہ میں دوستوں کے لیئے ایسی تقریبات منعقد کرتا رہتا ہوں، کبھی کسی کی سالگرہ، کبھی ناشتہ اور اب ڈنر ، اصل میں یہ سب مل بیٹھنے کا بہانا ہوتا ہے، کیونکہ ہم دوسرے لوگوں کی تقریبات میں ملتے تو ہیں، مگر اس وقت بندہ مصروف ہوتا ہے، اس وجہ سے دوستوں میں گپ شپ نہیں ہو سکتی، میں اپنے دوستوں کی عزت قدر اور پیار کرتا ہوں ان کے لیئے میرے دل میں بہت پیار اپنائیت اور خلوص ہے اور آج کا ڈنر بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے ، جو بنا مقصد اکھٹے ہوئے، اس تقریب کو نام تو دیا گیا، مگر میرے خیال میں پیار محبت ، دوستی، خلوص کا کوئی دن مقرر نہیں ہوتا، یعنی ایک دوسرے کو ملنے کے لیئے میں سب دوستوں کا مشکور ہوں جو میری دعوت قبول کی اس موقع پر سرور بخاری سب مہمانوں کا استقبال خود کرتے رہے، مہمانوں کے لیئے ڈنر کے ساتھ بار بی کیو کا بھی اہتمام کیا گیا تھا، اس موقع پر نامور صحافی، شہزاد فراموش نے غزل گائیکی سے اپنی آواز کے سحر میں محصور کیا ، تو گلوکار امیر احمد اور احمد نواز نے اپنے مخصوص انداز گائیکی سے ہال کو تالیوں پر مجبور کیا، فنکار تالیوں سے گلوکاروں کا ساتھ دیتے رہے، اس موقع پر بابر ناگی جو شوز میں سانپوں کے کرتب دکھاتے ہیں،وہ اپنا اژدھا بھی ساتھ لے کر آئے، جسے دیکھ کر ماڈلز چیخیں مارنا شروع ہو گیں، مگر جب بابر ناگی نے کہا کہ یہ آپ کو کچھ نہیں کہے گا تو فنکار ان کے ساتھ تصاویر بنواتے رہے،ہلکی پھلکی موسیقی بھی چلتی رہی اور ساتھ ساتھ قورمہ اور بار بی کیو کا دور بھی چلتا رہا، سرور بخاری سب مہمانوں کے لیئے خود کھانا اور باربی کیو لاتے رہے، فنکاروں کا اس موقع پر کہنا تھا کہ ہم مختلف تقریبات میں فنکار دوستوں اور صحافیوں سے ملتے تو رہتے ہیں، مگر اس طرح گپ شپ ممکن نہیں ہوتی، یہاں سب نے مل بیٹھ کر خوب انجوائے کیا، یہ سب سرور بخاری کا پیار ہے، آج کے دور میں ہر بندہ اپنی روزی روٹی کے چکر میں ہوتا ہے، یہاں اپنے لیئے ٹائم نکالنا مشکل ہوتا، مگر سرور بخاری نے آج سب کو اپنے لیئے ٹائم نکالنے کا موقع دیا، اس طرح کی تقریبات بھی ہوتی رہنی چاہیں، جو شوبز ایونٹس سے ہٹ کر ہوں، سرور بخاری نے آخر میں سب مہمانوں کا شکریہ ادا کیااور کہا کہ آپ سب دوستوں کی آمد میرے لیئے خوشی کا باعث بنی ہے، میں اس طرح مل بیٹھنے کے بہانے تلاش کرتا رہتا ہوں آئندہ بھی یہ سلسلہ جاری رہے گا

شیئرکریں
  • 27
    Shares