پی ٹی وی لاہور مرکز کو عروج پر پہنچانا میری اولین ترجیح ہو گی:سیف الدین

قومی نشریات میں لاہور کے کردار کوبڑھانے اور اس کی رونقیں دوبالا کرنے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائیں گے
پی ٹی وی ملک کی ثقافتی اساس کے تحفظ اور بہتر امیج کے فروغ کیلئے کوشاں ہے:جنرل منیجر کی میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو
لاہور مرکز اس وقت پندرہ سے زائد پروگرام تیار کررہا ہے، دو نئی سیریل بہت جلد سکرین پر جلوہ گر ہونگی
لاہور (انجم شہزاد) پاکستان ٹیلیویژن لاہور مرکز کے جنرل مینیجر سیف الدین نے کہا ہے کہ قومی اور علاقائی نشریات میں پی ٹی وی لاہور مرکز کے کردار کو بڑھانا اور اس سینٹر کی رونقیں دوبالا کرنا میرا مشن ہے جس کیلئے تمام تر وسائل اور صلاحیتیں بروئے کار لائی جائینگی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے شوبز اور کلچرل رپورٹرز کے ایک وفد سے لاہور میں ملاقات کے دوران کہی۔ وفد میں پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا کے شوبز رپورٹرز نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ تقریبا دو گھنٹے جاری رہنے والی اس ملاقات میں پی ٹی وی کے مختلف شعبوں کی کارکردگی اور ان کے کردار کو بہتر بنانے کیلئے مختلف معاملات اورتجاویز پر بات چیت کی گئی۔
پی ٹی وی لاہور کے جنرل مینیجرنے کہا کہ پاکستان ٹیلیویژن محض ایک ٹی وی چینل نہیں بلکہ ایک قومی ادارہ ہے جو ملک کی ثقافتی اور نظریاتی اساس کے تحفظ کیساتھ ساتھ ملک کے بہتر امیج کو فروغ دینے کیلئے کوشاں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ میڈیا بھی پی ٹی وی کے اس کردار کو مزید بہتر بنانے میں ہماری رہنمائی کرے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ٹیلیویژن لاہور مرکز کے جنرل مینیجر کا عہدہ چیلنج سمجھ کر لیا ہے اس مرکز کو عروج پر پہنچانا میری اولین ترجیح ہو گی۔
سیف الدین نے کہا کہ پاکستان ٹیلیویژن لاہور مرکز مالی مشکلات کے باوجود علاقائی اور قومی سطح پر پندرہ سے زائد پروگرام پیش کر رہا ہے اور اس مرکز سے بہت جلد دو نئی سیریل ٹوٹے پتے اور امی جی کا گھر شروع ہو رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سیریل ٹوٹے پتے میں مختلف معاشرتی پہلوؤں کو موضوع بنایا گیا ہے اس سیریل کے پروڈیوسر شوکت چنگیزی ہیں جبکہ امی جی کا گھر ایک سیٹ کام ہے جس میں ناظرین کو صحت مند تفریح میسر آئے گی۔
انہوں نے کہاکہ آ ج پی ٹی وی پہلے سے کہیں آزاد اور خودمختار اداہ ہے جس کا سہرہ یقیننا موجودہ سیاسی قیادت کو جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی وی پاکستان کی میڈیا انڈسٹری میں کلیدی کردار کا حامل ہے۔

شیئرکریں
  • 4
    Shares