سٹیج ڈرامہ ’’محبتاں سچیاں‘‘ عوام میں مقبولیت حاصل کر گیا،

ڈرامہ کامیڈی کے ساتھ ساتھ اصلاحی پہلو لیئے ہوئے ہے،میں ہر ڈرامہ میں کوئی نا کوئی پیغام ضرور دیتا ہوں، رائٹر و ڈائریکٹر جاوید راحت

ظفر ارشاد، مجاہد رانا کی جگتوں نے سماں باندھ دیا، جبکہ ایمن ملک، مریم خان، نور ملک کی ڈانس پرفارمنسز عروج پر ہیں،


رپورٹ، تصاویر، انجم شہزاد

کامیڈی ہر دور میں عوام کی ضرورت رہی ہے کیونکہ ہر بندہ تھکا ہارا اور اپنی پریشانیوں سے چھٹکارہ پانے کے لیئے کامیڈی کا سہارا لیتا ہے ، اور پاکستان میں کامیڈی ہمیشہ عروج پر رہی، اور کامیڈی کا ایک اہم میڈیم سٹیج ڈرامہ ہے، جو کسی دور میں بڑا عروج پر تھا، فیملیز ڈرامہ ہالوں میں آتی تھیں اور ڈراموں میں کامیڈی کے ساتھ ساتھ اصلاح کا بھی پہلو نمایاں ہوتا تھا، مگر پھر مزاح کے نام پر جگت اور پھر فحش گوئی اور ماں بہن کی گالیاں دی جانے لگیں، جس کی وجہ سے فیملیز نے ڈرامہ ہالوں میں آنا چھوڑ دیا ، رہی سہی کسر ولگر ڈانس نے نکالی، یہی وجہ ہے کہ فیملیز تھیٹر آنا گوارا نہیں کرتی، مگر سٹیج ڈرامہ آج بھی تفریح کا ایک بڑا ذریعہ ہے، اور لوگ تفریح طبع کے لیئے تھیٹر ہالوں کا ہی رخ کرتے ہیں، لاہور میں سٹیج ڈراموں کے لیئے کافی تھیٹر موجود ہیں،ان میں ہی ایک خوبصورت اضافہ قذافی سٹیڈیم میں پنجابی کمپلیکس بھی ہے، جہاں کافی عرصہ سے تواتر سے ڈرامہ پیش کیا جا رہا ہے، عوام کی اکثریت پنجابی کمپلیکس کا رخ کرتی ہے، گزشتہ دنوں تھیٹر میں جانے کا اتفاق ہوا، وہاں ڈرامہ ’’محبتاں سچیاں‘‘ چل رہا ہے، ڈرامہ لگا تو ایک ہفتے کے لیئے تھا، جبکہ عوام کی پسندیدگی کی وجہ سے ایک ہفتے کے لیئے بڑھا دیا گیا ، ڈرامہ کی مصنف و هدایتکار جاوید راحت ہیں، جو سٹیج ڈرامے کے حوالے سے ایک مستند نام ہیں، عرصہ بیس سال سے ڈرامے کر رہے ہیں، اور اپنے ڈراموں کے ذریعے کامیڈی کے ساتھ ساتھ اصلاح بھی کرتے ہیں، جاوید راحت نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سٹیج اصلاح معاشرہ کا بڑا ذریعہ ہے جسے کچھ فنکاروں نے کچھ اور ہی بنا دیا، اس کو بہتر کرنے کے لیئے اقدامات کیئے گئے اور اب کافی ڈرامہ بہتر ہوا بھی ہے ، کامیڈی، جگت اور فحش گوئی میں بڑا فرق ہوتا ہے، ایک اور سوال کے جواب میں کہا کہ ہمیشہ اپنے ڈراموں کے ذریعے مثبت پہلو اجاگر کرتا ہوں، یہی وجہ ہے کہ ناظرین ڈرامہ پسند کرتے ہیں، ڈرامہ کے پروڈیوسر ملک ریاض اور شیخ غلام رسول ہیں،ایسوسی ایٹ ڈائریکٹر عظیم نور ہیں، جبکہ کاسٹ میں پائل ملک،ایمن ملک،آرزو،مریم خان،نور ملک،ذوالفقار طوطی،زاہد خان، ببل،طارق عباس، زین علی،ظفر ارشاد، اور مجاہد رانا شامل ہیں، ڈرامہ میں فنکاروں کی کامیڈی کو خوب سراہا جا رہا ہے، جبکہ ایمن ملک، مریم، نور ملک کی ڈانس پرفارمنس کو بھی پسند کیا جا رہا ہے، ظفر ارشاد نے کہا کہ میرا کردار بہت پسند کیا جا رہا ہے، مجاہد رانا کی ہر انٹری پر ہال تالیوں سے گونجتا رہا، نور ملک نے کہا کہ لاہور کے علاوہ دیگر شہروں میں بھی پرفارم کیا مگر جو عزت پیار لاہور میں ملا، کہیں نہیں،نور ملک کا کہنا تھا کہ میں کبھی کسی سے جیلس نہیں ہوتی، اپنے کام پر دھیان دیتی ہوں، ایمان ملک نے کہا کہ جاوید راحت کے ساتھ کام کر کے بہت کچھ سیکھنے کا موقع ملا،جاوید راحت کا کہنا تھا کہ آئندہ بھی اسی طرح اصلاحی پہلو اجاگر کرتا رہوں گا

شیئرکریں
  • 6
    Shares